سعودی عرب کا ایک بار پھر پاکستانی طلبا کے لیے وظائف کا اعلان

سعودی عرب نے ایک مرتبہ پھر اپنی 25 یونیورسٹیوں میں اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لیے پاکستانی طلبا وطالبات کو 600 سکالرشپس دینے کا اعلان کیا ہے۔
ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے مطابق یہ وظائف ڈپلومہ، ڈگری، ماسٹرز اور اپی ایچ ڈی کے طلبا و طالبات کو دیے جائیں گے۔
سعودی عرب میں قانونی طور پر مقیم پاکستانی طالب علم اور پاکستان میں مقیم طلبا و طالبات دونوں ان سکالرشپس کے لیے اہل ہیں۔ 75 فیصد سکالر شپس پاکستان سے طالب علموں جبکہ 25 فیصد سعودی عرب میں مقیم پاکستانی طلبا کو دیے جائیں گے۔
وظائف کے لیے کیسے درخواست دے سکتے ہیں؟
سکالرشپ حاصل کرنے کے خواش مند طلبا کو متعلقہ یونیورسٹی کی ویب سائٹ یا آن لائن پورٹل پر براہ راست اپلائی کرنا ہوگا۔ ہر یونیورسٹی کا داخلے کا اپنا معیار و ٹائم فریم ہے۔ اس لیے طلبا کو اپنے متعلقہ مضمون اور کلاس میں داخلے کے حوالے سے یونیورسٹی سے مدد لینا ہوگی۔
شہزادی نورہ بن عبدالرحمان یونیورسٹی برائے طالبات ریاض اور جامعہ اسلامیہ مدینہ منورہ کے علاوہ تمام یونیورسٹیاں صرف 25 فیصد بین الاقوامی طلبا کو داخلہ دینے کی پابند ہیں۔
طلبا جب آن لائن اپلائی کر لیں گے تو یونیورسٹیاں طلبا کی جانب سے موصول ہونے والی سکالرشپ درخواستوں کو سعودی وزارت تعلیم کو بھیجیں گی جو سکالرشپ دینے کا حتمی فیصلہ کرے گی۔
درخواست گزار اپنی درخواست کی کاپی پاکستانی سفارت خانے کے آفیشل ای میل پر بھی بھیجیں گے تاکہ سعودی وزارت تعلیم کے ساتھ ان درخواستوں کا فالو اپ کیا جا سکے۔
سکالرشپ کے لیے اہلیت کا معیار کیا ہے؟
سکالر شپ کے لیے درخواست گزار کا تعلق پاکستان یا پاکستان کے زیر انتظام کشمیر سے ہونا چاہیے۔ 75 فیصد سکالر شپس پاکستان سے طالب علموں جبکہ 25 فیصد سعودی عرب میں مقیم پاکستانی طلبا کو دیے جائیں گے۔ سکالرشپ کے لیے مرد و خواتین دونوں درخواست دینے کے اہل ہیں۔
ڈگری پروگرام کے لیے درخواست دینے والوں کی عمریں 17 سے 25 سال کے دوران، ماسٹرز کے لیے 30 سال جبکہ پی ایچ ڈی کے لیے 35 سال سے کم ہونی چاہئیں۔ عمر کا حساب داخلہ کی حتمی تاریخ سے لگایا جائے گا۔ یہ ضروری ہے کہ سعودی سکالرشپ حاصل کرنے والا طالب علم اس وقت کوئی اور سکالرشپ حاصل نہ کر رہا ہو۔
سکالر شپ کا اہل ہونے کے لیے ضروری ہے کہ طالبا علم کا کوئی مجرمانہ ریکارڈ موجود نہ ہو اور اسے کسی بھی وجہ سے کبھی بھی یونیورسٹی سے بے دخل نہ کیا گیا ہو۔
سکالرشپ کے تحت کیا فوائد ہوں گے؟
سکالرشپ حاصل کرنے والے طلبا کو دوران تعلیم سعودی عرب میں مفت رہائش کی سہولت اور شادی شدہ طلبا کو ابتدائی تین ماہ فرنشنگ الاونس بھی فراہم کیا جائے گا۔ سعودی عرب اور واپسی کے لیے مفت ایئر ٹکٹ اور شادی شدہ ہونے کی صورت میں اہل خانہ کے لیے مفت طبی علاج کی سہولت فراہم کی جائے گی۔
سکالرشپ حاصل کرنے والوں کو یونیورسٹی کیمپسز میں رعائتی نرخوں پر کھانا، کھیلوں اور تفریح کی سہولیات فراہم کی جائیں گی جبکہ زیر کفالت افراد کے لیے سفری اخراجات میں معاونت بھی کی جائے گی۔
سائنس کے طلبا و طالبات کو ماہانہ 900 جبکہ آرٹس کے شعبہ میں 850 سعودی ریال ادا کیے جائیں گے۔
طلبا و طالبات درج ذیل لنک پر جا کر اپنی پسند کی یونیورسٹی کے پورٹل پر براہ راست درخواست دے سکتے ہیں۔
https://studyinsaudi.moe.gov.sa/Universities
واضح رہے کہ سعودی عرب نے گزشتہ سال بھی پاکستان کے 600 طلبا و طالبات کے علاوہ دنیا بھر ساڑھے پانچ ہزار سے زائد طلبا و طالبات کو اپنی جامعات میں داخلے اور وظائف دیے تھے۔

Views= (596)

Join on Whatsapp 1 2

تازہ ترین