7 سالہ بچے کے ریپ اور قتل کے جرم میں بڑا بھائی گرفتار

بہاولنگر کے گاؤں محمد پور سنساراں میں 7 سالہ بچے کے ریپ اور قتل کا مجرم اس کا بڑا بھائی نکلا، پولیس نے ملزم کو گرفتار کر لیا جو مبینہ طور پر ایک عادی ریپسٹ ہے۔
رپورٹ کے مطابق تفتیشی افسر شہزاد اشفاق نے بتایا کہ 2 ستمبر کو بچے کی لاش گاؤں میں ایک زمیندار کے گھر سے ملحقہ گلی سے ملی تھی، قتل سے پہلے بچے کو ریپ کا نشانہ بنایا گیا تھا۔
تفتیشی افسر نے کہا کہ علاقے میں درجنوں مشکوک افراد سے پوچھ گچھ کے باوجود پولیس کو کوئی سراغ نہیں مل رہا تھا، جب پولیس نے بچے کے اہل خانہ سے تفتیش کرنے کا فیصلہ کیا تو بیانات ریکارڈ کرانے کے دوران متاثرہ بچے کا 19 سالہ بھائی اور 25 سالہ بہنوئی بے چین نظر آئے۔
ملزم نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ واقعہ کے روز اس نے شہوت کو ابھارنے والی ادویات استعمال کی تھیں اور گاؤں کے ایک نوعمر لڑکے کا ریپ کرنے جا رہا تھا جس کا وہ کافی عرصے سے ریپ کرتا رہا تھا، تاہم کوشش کے باوجود وہ اس لڑکے کو نہ ڈھونڈ سکا۔
جب وہ گھر واپس آیا تو اس نے اپنے نابالغ بھائی کو گلی میں دیکھا اور اسے خالی گھر میں لے گیا جہاں اس نے اسے ریپ کا نشانہ بنا ڈالا، اس دوران بچے نے چیخ و پکار کی تو ملزم نے اس کا گلا دبا کر مار ڈالا۔
پولیس نے دعویٰ کیا کہ ملزم عادی ریپسٹ ہے جو علاقے میں مویشیوں اور پالتو جانوروں کا ریپ کرتے ہوئے متعدد بار رنگے ہاتھوں پکڑا جا چکا ہے، ملزم نے کئی دیگر نابالغ بچوں کو رقم کا لالچ دے کر یا زبردستی ریپ کا نشانہ بنانے کا اعتراف کیا۔
ملزم نے تفتیش کاروں کو بتایا کہ ملزم اکثر نابالغ بچوں کو سڑک پر ملنے والی رقم کا لالچ دیتا تھا اور وہ دھمکیوں کے خوف سے خاموش بھی رہتے تھے۔
تفتیشی افسر نے کہا کہ ملزم کے بہنوئی کو بھی حقائق چھپانے اور جرم کی حوصلہ افزائی کے الزام میں مقدمہ درج کر کے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

Views= (432)

گروپ جائن کرنے کے لیے کلک کریں (NewsHook) /#/ (NewsHook-2)

اہم خبریں/ تازہ ترین