مری کو ضلع بنانے کا فیصلہ،اوورچارجنگ کرنیوالے ہوٹلوں کیخلاف کارروائی کا حکم

ملکہ کوہسار کا نیانام کیا ہوگا؟ تجویز سامنے آگئی

وزیراعلیٰ پنجاب نے مری کے ہوٹلوں میں اوورچارجنگ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کا حکم دے دیا۔
عثمان بزدار نے کمشنر راولپنڈی کو اوور چارجنگ کرنے والے ہوٹلوں کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کا حکم دیا ہے۔
وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ اوورچارجنگ کاروبار نہیں بلکہ لوٹ مار کے مترادف ہے جو قطعاً برداشت نہیں، انتظامیہ سیاحتی مقامات پر ریٹ لسٹ کے مطابق خرید و فروخت یقینی بنائے، سیاحتی مقامات پر سیاحوں کو لوٹنے والوں کومعاف نہیں کیا جائے گا۔
دریں اثناء مری کا نیا نام ضلع کوہسار رکھنے کی تجویز دی گئی ہے، اس سیاحتی علاقے کے لئے کوہسار ڈویلپمنٹ اتھارٹی بھی قائم کرنے کی باضابطہ تجویز پیش کی گئی ہے۔
وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار اور ضلع کے قیام اور کوہسار ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے لئے ہدایات جاری کردیں۔ ضلع کوہسار سیاحتی لحاظ سے پاکستان کا پہلا سیاحتی ضلع ہوگا۔
ضلع کوہسار کی حد بندی کے لئے بور ڈ آف ریونیو سے سفارشات طلب جبکہ کون کون سے علاقے نئے ضلع میں ہوں گے اس حوالے سے چیف سیکرٹری اور ایس ایم بی آر سے سفارشات طلب کی گئی ہیں۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ تجویز کردہ ضلع کوہسار کے علاقے کی حدود خیبر پختونخواہ تک ہوگی، پنڈی کے کچھ علاقے بھی اس ضلع میں شامل ہوسکتے ہیں۔
وزیراعلیٰ پنجاب نے ارکان اسمبلی سے مشاورت کی ہدایت کردی۔ کوہسار ڈویلپمنٹ اتھارٹی قائم کی جائے گی، اتھارٹی مری کے سیاحتی مقام پر تعمیر و ترقی کی ذمہ دار ہوگی۔
ذرائع کے مطابق کوہسار ڈویلپمنٹ اتھارٹی ریسکیو اور ریلیف آپریشن کی بھی ذمہ دار ہوگی جبکہ سیاحتی ضلع کو مشینری خریدنے کے لئے خصوصی فنڈز فراہم کیے جائیں گے۔
یاد رہے گزشتہ روز وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی صدارت مری میں اعلی سطح اجلاس ہوا تھا۔ اجلاس میں مری کو ضلع کا درجہ دینے کا اعلان کیا گیا جبکہ اجلاس میں ایم این اے صداقت علی عباسی، صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت اور ترجمان پنجاب حکومت حسان خاور نے شرکت کی۔

گروپ جائن کرنے کے لیے کلک کریں (NewsHook) /#/ (NewsHook-2)

اہم خبریں/ تازہ ترین