پی ٹی آئی اپوزیشن لیڈر کی دوڑ سے باہر، مزید 43 ارکان کے استعفے منظور

پاکستان کی قومی اسمبلی کے سپیکر راجہ پرویز اشرف نے تحریک انصاف کے مزید 43 ارکان کے استعفے منظور کر لیے ہیں جس کے بعد اسمبلی میں پی ٹی آئی کے ارکان کی تعداد 27 رہ گئی ہے جس میں اکثریت منحرف ارکان کی ہے۔
قومی اسمبلی کے اہلکار نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ سپیکر قومی اسمبلی نے چند دن قبل ہی پی ٹی آئی کے مزید 43 ارکان کے استعفے الیکشن کمیشن کو ارسال کر دیے تھے۔
چند روز قبل سپیکر قومی اسمبلی نے پی ٹی آئی کے 35 اراکین قومی اسمبلی کے استعفے منظور کیے تھے جس کے بعد مستعفی پی ٹی آئی حامی اراکین قومی اسمبلی کی تعداد 81 ہو گئی تھی جن میں پارٹی کے حمایتی شیخ رشید کا استعفٰی بھی شامل تھا۔
منگل کو مزید 43 ارکان اسمبلی کے استعفے منظور ہونے کے بعد اب کل تعداد 124 ہو گئی ہے۔
قومی اسمبلی میں پی ٹی آئی ارکان اسمبلی کی تعداد 27 رہ گئی ہے جن میں21 سے زائد ارکان منحرف ہو چکے ہیں اور راجہ ریاض کو اپوزیشن لیڈر نامزد کر چکے ہیں۔
سابق سیکریٹری الیکشن کمیشن کنور دلشاد کے مطابق پی ٹی آئی کے پاس اب ہائی کورٹ کا فورم موجود ہے اور وہاں اپیل کر کے سپیکر قومی اسمبلی کے فیصلے کے خلاف حکم امتناع لیا جا سکتا ہے تاہم ارکان اسمبلی کو یہ ثابت کرنا ہوگا کہ انہوں نے سپیکر کو استعفیٰ نہیں بھیجے یا انہوں نے سپیکر سے استعفے واپس لے لیے ہیں۔
انہوں نے بتایا کہ ’استعفے کی منظوری کے لیے شرط یہی ہے کہ سپیکر قومی اسمبلی مطمئن ہوں کہ استعفیٰ کسی دباؤ کے بغیر دیا گیا ہے اور جعلی نہ ہو۔‘
دوسری جانب تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری نے ٹویٹ میں کہا ہے کہ شہباز شریف کی حکومت 172 لوگوں کی حمایت کھو چکی ہے اور حکومت بچانے کے لیے لوٹوں پر انحصار کر رہی ہے۔

جمعے کو الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سپیکر قومی اسمبلی کی جانب سے استعفے منظور کیے جانے کے بعد تحریک انصاف کے مزید 35 ارکان کو ڈی نوٹیفائی کر دیا تھا۔
سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف نے جمعے کو ہی اعلامیہ جاری کیا تھا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ آئین و قانون کی متعلقہ شقوں کے مطابق پی ٹی آئی کے 35 مزید ارکان اسمبلی کے استعفے منظور کر لیے ہیں۔
اعلامیے کے مطابق استعفوں کی منظوری کا اطلاق اپریل 2022 سے ہو گا۔

Views= (230)

گروپ جائن کرنے کے لیے کلک کریں (NewsHook) /#/ (NewsHook-2)

تازہ ترین