حریم شاہ کے خلاف ’سائبر کرائم‘ کی تفتیش ،رقم کو اپنا کہنے والا کس جماعت کا نکلا؟

ویڈیو :- حریم شاہ کا یو-ٹرن بھی کام نہ آیا،

حریم کی ایک اور ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں رقم کا اعتراف کرنے والے شخص نے انکشاف کیا ہے کہ اس کا تعلق مبینہ طور پر پاکستان تحریک انصاف سے ہے اور وہ الیکشن کے لیے پی ٹی آئی کا مضبوط امیدوار ہے۔
مذکورہ شخص نے ویڈیو میں اعتراف کیا کہ حریم کے پاس موجود پیسہ ان کا تھا جو انہوں نے بینک ڈیپازٹ کیا۔
ویڈیو میں موجود شخص کا کہنا تھا کہ انہیں کسی تعارف کی ضرورت نہیں، وہ این اے 68 کے حوالے سے پاکستان تحریک انصاف کے مضبوط امیدوار ہیں جب کہ انہیں تمام حکومتی ممبران بھی جانتے ہیں۔
اس پر حریم نے کہا کہ ایک بار پھر جان لیں کہ پی ٹی آئی والے بھی کسی نہ کسی ملک میں میرے ساتھ ہیں۔

دریں اثناء وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کی سائبر کرائم برانچ نے بھی ٹک ٹاک اسٹار حریم شاہ کے خلاف ملک اور ریاستی اداروں کو بدنام کرنے کے تحت تفتیش کا آغاز کردیا۔
ایف آئی اے سائبر کرائم سندھ کے سربراہ عمران ریاض نے اپنی ٹوئٹس اور انسٹاگرام پوسٹ میں بتایا کہ وفاقی تحقیقاتی ادارے نے حریم شاہ کی جانب سے ویڈیو میں منی لانڈرنگ کا اعتراف کرنے اور پھر اس ویڈیو کو مذاق کرنے کی دوسری ویڈیو کا نوٹس لے لیا۔
عمران ریاض کے مطابق حریم شاہ کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا گیا جب کہ ان کے خلاف پاکستان اور ریاستی اداروں کو بدنام کرنے کا کیس رجسٹرڈ کرکے تفتیش شروع کردی گئی۔
انہوں نے بتایا کہ حریم شاہ کی جانب سے منی لانڈرنگ کا اعتراف اور پھر مذکورہ ویڈیو کو مزاحیہ ویڈیو قرار دینے کی دوسری ویڈیو بناکر ملک اور ریاستی اداروں کو بدنام کرنا اور ان کے کام میں خلل ڈالنا سائبر قوانین کے تحت منی لانڈرنگ کے زمرے میں آتا ہے۔
انہوں نے واضح کیا کہ سائبر کرائم کراچی برانچ میں ٹک ٹاکر کے خلاف مقدمہ درج کرکے انہیں جواز پیش کرنے کے لیے نوٹس جاری کردیا گیا۔

اس سے قبل گزشتہ شب ایف آئی اے سندھ نے حریم شاہ کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد ان کے خلاف منی لانڈرنگ کی تفتیش شروع کردی تھی۔
ایف آئی اے نے بتایا تھا کہ حریم شاہ کے ویزے، امیگریشن اور سفری دستاویزات کی تفصیلات حاصل کر لی گئیں اور ان کے خلاف فارن ایکسچینج قوانین کے تحت کارروائی کی جارہی ہے۔
ایف آئی اے کی جانب سے منی لانڈرنگ کی تحقیقات شروع کرنے کے اعلان کے بعد حریم شاہ نے اپنی وضاحتی ویڈیو جاری کی تھی اور بتایا تھا کہ انہوں نے پاکستان سے بھاری غیر ملکی کرنسی کے ساتھ برطانیہ منتقل ہونے کی بات مذاق میں کی تھی اور وہ کوئی غیر ملکی پیسے لے کر پاکستان سے منتقل نہیں ہوئیں۔
ٹک ٹاکر نے بتایا تھا کہ انہیں منی لانڈرنگ سے متعلق کوئی علم نہیں، انہوں نے کبھی ایسا کام نہیں کیا اور اگر وہ ایسا کوئی غیر قانونی کام کرتیں تو اس کی ویڈیو کیوں بناتیں؟
انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ ویڈیو میں نظرآنے ہزاروں پاؤنڈز برطانیہ میں موجود ایک شخص کے تھے، جنہیں وہ بھائی کہتی ہیں اور جب وہ بھائی کے دفتر آئیں تو پیسوں کے ساتھ انہوں نے ویڈیو بناکر اسے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر شیئر کیا۔

قبل ازیں سوشل میڈیا پر جاری ویڈیو میں حریم شاہ نے کہا کہ مجھے کسی نے نہیں روکا نہ ہی روک سکتا ہے، پہلی مرتبہ پاکستان سے یو کے اتنا بڑا اماؤنٹ لے کر آرہی تھی، پاکستانی پیسے اور پاسپورٹ سمیت کسی چیز کی وقعت نہیں۔
حریم نے اپنے فالوور سے یہ بھی کہا کہ آپ لوگ اماؤنٹ لاتے وقت خیال کیجیے گا کیونکہ پکڑ لیتے ہیں، مجھے تو کسی نے کچھ نہیں کہا اور کہہ بھی نہیں سکتے، میں تو بہت آسان اور محفوظ طریقے سے پہنچ گئی۔
حریم کا مزید کہنا تھا کہ حکومت نے تو وعدہ کیا تھا کرنسی اورپاسپورٹ کواوپر لےجائیں گے ، حکومت کچھ نہیں کرسکی صرف باتیں ہی کرسکتے ہیں، برطانیہ میں اتنی سردی ہے لیکن کسی کی موت نہیں ہوئی، مری میں بارش اور برفباری ہوئی تو اموات ہوگئیں۔
خیال رہے کہ منی لانڈرنگ کی تحقیقات کی خبریں میڈیا پر چلنے کے فوری بعد حریم شاہ نے اس حوالے سے ویڈیوز اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس سے ڈیلیٹ کردیں۔

Views= (98)

گروپ جائن کرنے کے لیے کلک کریں (NewsHook) /#/ (NewsHook-2)

اہم خبریں/ تازہ ترین