پی ٹی آئی کی خیبر پختونخوا اور پنجاب اسمبلی تحلیل کرنے کی توثیق

تحریک انصاف کی سینیئر قیادت نے صوبہ پنجاب اور خیبر پختونخوا اسمبلی تحلیل کرنے کی توثیق کر دی ہے۔
چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی زیرصدارت پارٹی کی سینیئر قیادت کا اجلاس پیر کے روز زمان پارک لاہور میں منعقد ہوا۔
پی ٹی آئی کے سینیئر نائب صدر فواد چودھری نے اجلاس کے بعد میڈیا کو بتایا کہ پارٹی کی سینیئر قیادت نے پنجاب اور خیبر پختونخوا اسمبلی تحلیل کرنے کی توثیق کی ہے۔
’جمعہ کو پنجاب اور ہفتے کو خیبر پختون خوا کا پارلیمانی اجلاس ہوگا جس کے بعد دونوں اسمبلیوں کو توڑ دیا جائے گا۔‘
انہوں نے مزید کہا کہ ’خیبر پختونخوا کے وزیراعلٰی سے مشاورت ہوگئی ہے، منگل کو وزیراعلٰی پنجاب چودھری پرویز الٰہی سے عمران خان ملاقات کریں گے۔‘
’سندھ اور بلوچستان میں تحریک انصاف ارکان اسمبلی اپنے استعفے قیادت کو جمع کرائیں گے۔‘
انہوں نے قومی اسمبلی بھی تحلیل کرنے اور عام انتخابات کی تاریخ کا اعلان کرنے کا مطالبہ کیا۔
فواد چودھری نے بتایا کہ ’ہم آئندہ انتخابات کے لیے ٹکٹوں کی تقسیم کے لیے بورڈ تشکیل دے رہے ہیں، امید ہے عوام ہمیں بھاری مینڈیٹ سے نوازیں گے۔‘
’الیکشن کمیشن ن لیگ کا ترجمان نہ بنے، ہم استعفے دیں گے تو الیکشن کمیشن 90 دن میں الیکشنز کروانے کا پابند ہوگا۔‘
اجلاس میں شرکاء کے لیے آئینی مرحلے سے آگاہ کیا گیا۔
اجلاس میں بابر اعوان اور سینیٹر علی ظفر نے اسمبلیوں سے مستعفی ہونے کے حوالے سے آئینی اور قانونی پہلوؤں پر بریفنگ دی گئی۔
اجلاس میں حکومت مخالف تحریک کے لیے دیگر آپشنز کا بھی جائزہ لیا جا رہا ہے۔
اجلاس میں شاہ محمود قریشی، اسد عمر، فواد چوہدری، شفقت محمود، یاسمین راشد، پنجاب کے سینیئر وزیر میاں اسلم اقبال، میان محمود الرشید اور سیکرٹری اطلاعات فرخ حبیب بھی اجلاس میں شریک ہیں۔
وزیراعلٰی خیبر پختونخوا محمود خان، تیمور جھگڑا، علی امین گنڈا پور، قاسم سوری، عثمان بزدار، سپیکر پنجاب اسمبلی سبطین خان اور دیگر رہنما بھی اجلاس میں موجود ہیں۔

Views= (517)

گروپ جائن کرنے کے لیے کلک کریں (NewsHook) /#/ (NewsHook-2)

تازہ ترین