بال کاٹنا مہنگا پڑگیا ۔۔ ہیئر ڈریسر کی معمولی غلطی کی وجہ سے 2 کروڑ کا نقصان

بال ایسی چیز ہیں جو ہر ایک کو ہی عزیز ہوتے ہیں، اس لئے زیادہ تر لوگ چاہے پھر وہ خواتین ہوں یا مرد حضرات بال کٹوانے کے معاملے میں ہر کسی پر بھروسہ نہیں کرتے بلکہ ایک ہی جگہ سے کٹواتے ہیں۔ کیونکہ نائی کی زرا سی غلطی آپ کی شخصیت بگاڑ سکتی ہے۔ پر بعض اوقات ہیئر ڈریسر کو غلطی بھاری پڑ جاتی ہے۔
ایسا ہی ایک واقعہ بھارت کی ماڈل آشنا رائے کے ساتھ پیش آیا ۔ جنہوں نے نیو دہلی کے ایک ٹاپ ہوٹل میں 2018ء میں قیام کیا اور اس دوران اس ہوٹل کے سیلون میں وہاں گئيں اور ان کے عملے سے درخواست کی کہ ان کے بال صرف لمبائی سے چار انچ تک ٹرم کر دیں-
مگر اس سیلون کے عملے کی ناتجربہ کاری کے سبب جب انہوں نے ٹرمنگ کے بعد اپنے بالوں کو دیکھا تو ان کو اندازہ ہوا کہ انہوں نے ان کے سر پر صرف چار انچ تک بال چھوڑے اور باقی سارے بال کاٹ دیے جس نے ان کو شدید صدمے سے دوچار کر دیا-
کافی جھگڑے کے بعد آشنا رائے نے اس سیلون کے خلاف کیس کر دیا جس کا تاریخی فیصلہ گزشتہ ہفتے سامنے آیا جس میں کہا گیا کہ آشنا رائے ایک ماڈل تھیں اور ان کی مختلف بالوں کی صحت کو بہتر بنانے والی کمپنیوں کے ساتھ معاہدہ تھا جن کے لیے وہ ماڈلنگ کر رہی تھیں۔ بالوں کی اس کٹنگ کے سبب ان کو ان کانٹریکٹ سے بھی ہاتھ دھونے پڑے جس نے ان کو معاشی نقصان سے دو چار کیا اس کے ساتھ ساتھ سخت ذہنی اذیت اور صدمے سے بھی گزرنا پڑا-
ان کی ان کے بالوں کے ساتھ ایک جذباتی لگاؤ بھی تھا اور اس کے علاوہ انہوں نے اپنے بالوں کی خوبصورتی اور نشو ونما پر خطیر رقم بھی خرچ کی ہوئی تھی جو کہ ان بالوں کے کٹنے کی صورت میں ان کے لیے سخت تکلیف کا سبب بنی-
اس وجہ سے عدالت کے مطابق اس تمام نقصان کی ذمہ داری اس سیلون کے مالکان پر عائد ہوتی ہے اس لیے ہرجانے کے طور ان کو آٹھ ہفتوں میں دو کروڑ روپے ادا کرنے کا حکم دیا ہے ۔ یہ فیصلہ اس حوالے سے تاریخی فیصلہ ہے کہ اس میں ماڈل کو ان کے نقصان کی بھر پائی بھی ہو گئی اور باقی لوگوں کو سبق بھی مل گیا کہ آئندہ ایسی غلطی کو نہ دہرائیں-

Views= (431)

گروپ جائن کرنے کے لیے کلک کریں (NewsHook) /#/ (NewsHook-2)

اہم خبریں/ تازہ ترین